آزادی مارچ،وزیر داخلہ اعجاز شاہ کی شرکا کو وارننگ



اسلام آباد(24 نیوز) وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا ہے کہ مولانا مارچ کریں لیکن عدالتی فیصلے کا بھی احترام کرنا ہوگا،وزیراعظم نے فیصلہ کیا میں سیاسی آدمی ہوں مولانا کو نہیں روکوں گا،حکومت اور اپوزیشن کی بیان بازی سے سیاسی ماحول کشیدہ ہوا،مارچ کریں گے یا دھرنا دیں گے صرف مولانا کو ہی پتا تھا اتحادیوں کو نہیں ۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا ہے کہ  3 اکتوبر کو مولانا فضل الرحمان نے پہلی با راحتجاج کی تاریخ دی ،جولائی میں اپوزیشن نے حکومت کےخلاف احتجاج کا فیصلہ کیا ۔رہبر کمیٹی نے اپوزیشن کمیٹی کو ڈی چوک پر خطرات سے آگاہ کیا،رہبر کمیٹی سےحکومتی کمیٹی نےکسی مطالبےپربات نہیں کی خطرات سےآگاہ کیا۔

وزیر داخلہ نے مزید کہا کہ اسلام آباد میں پہلی بار مارچ نہیں ہو رہا ،ماضی میں بھی کئی بار یلغار کی گئی، فضل الرحمان کا پہلے مطالبہ ایک تھا اب چھ ہو گئے ،سرکاری عمارتوں اور غیر ملکی سفارتخانوں کی سیکورٹی حکومت کی ذمہ داری ہے

یاد رہے یو آئی ف کا  آزادی مارچ  اسلام آباد کی طرف رواں دواں ہے،مارچ کے شرکا نے رات کو گوجرخان میں پڑاؤ کیا، آج 12بجے کے بعد شہراقتدار کی طرف بڑھیں گے، خیبرپختونخوا، گلگت بلتستان سے بھی قافلےآج اسلام آباد میں داخل ہوں گے۔

Azhar Thiraj

Senior Content Writer